Results 1 to 2 of 2

Thread: گا رہا تھا کوئی درختوں میں

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    20,188
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5861
    Rep Power
    214774

    New5555 گا رہا تھا کوئی درختوں میں


    گا رہا تھا کوئی درختوں میں
    رات نیند آگئی درختوں میں
    چاند نکلا افق کے غاروں سے
    آگ سی لگ گئی درختوں میں
    مینہہ برسا تو برگ ریزوں نے
    چھیڑ دی بانسری درختوں میں
    یہ ہوا تھی کہ دھیان کا جھونکا
    کس نے آواز دی درختوں میں
    ہم ادھر گھر میں ہو گئے بے چین
    دور آندھی چلی درختوں میں
    لیے جاتے ہے موسموں کی پکار
    اجنبی اجبنی درختوں میں
    کتنی آبادیاں ہیں شہر سے دور
    جاکے دیکھو کبھی درختوں میں
    نیلے پیلے سفید لال ہرے
    رنگ دیکھے سبھی درختوں میں
    خوشبوؤں کی اداس شہزادی
    رات مجھ کو ملی درختوں میں
    دیر تک اُس کی تیز آنکھوں میں
    روشنی سی رہی درختوں میں
    چلتے چلتے ڈگر اجالوں کی
    جانے کیوں مڑ گئی درختوں میں
    سہمے سہمے تھے رات اہل چمن
    تھا کوئی آدمی درختوں میں




    2gvsho3 - گا رہا تھا کوئی درختوں میں

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    20,188
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5861
    Rep Power
    214774

    Default Re: گا رہا تھا کوئی درختوں میں

    2gvsho3 - گا رہا تھا کوئی درختوں میں

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •