Results 1 to 2 of 2

Thread: کہیں اجڑی اجڑی سی منزلیں کہیں ٹوٹے پھوٹے سے بام و در

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    20,188
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5861
    Rep Power
    214774

    New5555 کہیں اجڑی اجڑی سی منزلیں کہیں ٹوٹے پھوٹے سے بام و در


    کہیں اجڑی اجڑی سی منزلیں کہیں ٹوٹے پھوٹے سے بام و در
    یہ وہی دیار ہے دوستو جہاں لوگ پھرتے تھے رات بھر
    میں بھٹکتا پھرتا ہوں دیر سے یونہی شہر شہر نگر نگر
    کہاں کھو گیا مرا قافلہ کہاں رہ گئے مرے ہم سفر
    جنہیں زندگی کا شعور تھا انہیں بے زری نے بچھا دیا
    جو گراں تھے سینۂ چاک پر وہی بن کے بیٹھے ہیں معتبر
    مری بیکسی کا نہ غم کرو مگر اپنا فائدہ سوچ لو
    تمہیں جس کی چھاؤں عزیز ہے میں اُسی درخت کا ہوں ثمر
    یہ بجا ہے آج اندھیرا ہے ذرا رت بدلنے کی دیر ہے
    جو خزاں کے خوف سے خشک ہے وہی شاخ لائے گی برگ وبر





    2gvsho3 - کہیں اجڑی اجڑی سی منزلیں کہیں ٹوٹے پھوٹے سے بام و در

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    20,188
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5861
    Rep Power
    214774

    Default Re: کہیں اجڑی اجڑی سی منزلیں کہیں ٹوٹے پھوٹے سے بام و در

    2gvsho3 - کہیں اجڑی اجڑی سی منزلیں کہیں ٹوٹے پھوٹے سے بام و در

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •