Results 1 to 2 of 2

Thread: ہمارے کام رفتہ رفتہ سارے بن رہے تھے

  1. #1
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    23,636
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5874
    Rep Power
    214778

    Islam ہمارے کام رفتہ رفتہ سارے بن رہے تھے

    ہمارے کام رفتہ رفتہ سارے بن رہے تھے
    کہ دریا چل پڑا تھا اور کنارے بن رہے تھے
    کسی سے گفتگو آغاز ہونا چاہتی تھی
    خدا نے بولنا تھا تیس پارے بن رہے تھے
    بچھایا جا چکا تھا ایک بچھونا آسماں پر
    ابھی مہتاب بننا تھا، ستارے بن رہے تھے
    کہیں پر پنجۂ مریم میں آتش پھیلتی تھی
    کہیں پر زکریاؑ تھا اور آرے بن رہے تھے
    چھپائی جا رہی تھی آگ سی اس میں کوئی شے
    ہوا معلوم یہ وہ دل ہمارے بن رہے تھے
    مری نگران تھیں آنکھیں جہاں پر تُو کھڑی تھی
    جہاں پر تیری نظریں تھیں نظارے بن رہے تھے
    رُکی تھی خلق میں آواز سے ملتی کوئی چیز
    تھی کوئی بات جو اتنے اشارے بن رہے تھے
    جہاں پر تیز بارش تھی وہیں تھی بند ڈِبیہ
    وہیں سے ہوتے ہوتے سرخ دھارے بن رہے تھے
    گلی میں شور سا برپا تھا اور بچے گھروں میں
    نکلنے والے تھے، رنگیں غبارے بن رہے تھے
    اقتدار جاوید
    2gvsho3 - ہمارے کام رفتہ رفتہ سارے بن رہے تھے

  2. #2
    Join Date
    Nov 2014
    Location
    Lahore,Pakistan
    Posts
    23,636
    Mentioned
    1562 Post(s)
    Tagged
    20 Thread(s)
    Thanked
    5874
    Rep Power
    214778

    Default Re: ہمارے کام رفتہ رفتہ سارے بن رہے تھے

    2gvsho3 - ہمارے کام رفتہ رفتہ سارے بن رہے تھے

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •